1. Skip to Menu
  2. Skip to Content
  3. Skip to Footer>

جنت البقیع میں مدفون علمائے دیوبند

مدینہ منورہ کو بہت مقام حاصل ہے یہی وہ شہر ہے جہاں پر وجہہ کائنات سرور کائنات آقائے نامداررحمتہ للعالمین جناب نبی کریم صلی اﷲ علیہ وسلم آرام فرما ہیں۔مدینہ منورہ میں ایمان کے ساتھ مرنے کے بعد جنت البقیع میں دفن ہونا بہت بڑی نعمت ہیں،جہاں حضور صلی اﷲ علیہ وسلم کے اہل بیت مدفون ہیں،یعنی حضرت عباس رضی اﷲ عنہ، حضرت حسن رضی اﷲعنہ، حضور اکرم صلی اﷲ علیہ وسلم کی صاحبزدایاں, صاحبزادے حضرت ابراہیم آرام فرما ہیں، اور تیسرے خلیفہ راشد حضرت عثمان بن عفان رضی اﷲ عنہ، دس ہزار صحابہ کرام رضی اﷲ عنہم، بے شمار تابعین، تبع تابعین اور لاتعداد علما، صلحا، شہدا اور اولیاءکرام رحمہم اﷲ مدفون ہیں۔

 

 

غیر مقلدین کے سوالوں کے جوابات

غیر مقلدین حضرات عوام اور ناواقفوں کو لامذہبیت کے راستہ پر لگانے کے لئے مختلف ہتھکنڈے استعمال کر رہے ہیں، انہیں میں سے ایک طریقہ ان کا یہ ہے کہ وہ اپنی طرف سے کچھ سوالات قائم کر رہے ہیں اور ان کو کتابچہ کی شکل میں عوام میں پھیلا کر مقلدین سے یہ مطالبہ کرتے ہیں کہ ان کا جواب دیا جائے۔ ان سوالات میں علم و عقل سے زیادہ عوام کے جذبات کو ابھارنے کی تکنیک استعمال کی جاتی ہے۔

آج بھی عدم تقلید کے نتیجہ میں غیر مقلدوں میں شیعیت و رافضیت کے جراثیم پیدا ہو چکے ہیں اور اسلاف اور صحابہ کرام کے بارے میں ان کی تبرا گوئی شیعوں کی طرح ہو گئی۔

مسئلہ [20 رکعات] تراویح

تعیین مدعی

اس مسئلہ میں حنفیہ [شافعیہ ، مالکیہ ، حنبلیہ] مدعی اور غیرمقلدین مدعی علیہ ہیں کیونکہ ہم 20 رکعات کے قائل ہیں اور غیرمقلدین 8 رکعت کے ، 8 تک دونوں کا اتفاق ہے لیکن ہم زیادتی کو ثابت کرتے ہیں "والذی یثبت أمرا زائد فهو المدعی" لہذا ہم مدعی ہیں

نیز "المدعی من إذا ترك ترك" والی تعریف بھی ہم پر صادق آتی ہے ، ہم 20 رکعات کے قائل ہیں ، غیرمقلدین کی 8 رکعات ان 20 میں شامل ہیں ، وہ [غیرمقلدین] کہتے ہیں کہ آپ اپنے 20 رکعات والے دعوی سے دستبردار ہوجائیں تو بحث و مباحثہ ختم - اس کے پیش نظر بھی ہم مدعی ہیں اور دعوی لکھنا مدعی کی ذمہ داری ہے ، غیرمقلدین جواب دعوی لکھیں گے

 

 

 

کھلا خط ان نوجوانوں کے نام جو زید حامد سے متاثر ہیں

میرے وطن کے نوجوانوں

السلام علیکم

دوستوں آج آپ کو خط لکھنے کی وجہ بہت اہم ہے اور وہ یہ ہے کہ زید زمان حامد نامی شخص اس وقت ایک متنازعہ شخصیت بن چکے ہیں اور جسکی وجہ سے ہم آپس میں ایک دوسرے سے لڑنے جھگڑنے لگ گئے ہیں حالانکہ ہم ایک دوسرے کو کل تک جانتے بھی نہ تھے اور آج ایک دوسرے کو گالم گلوش کر رہے ہیں کیوں؟

اگر ہم ٹائم پاس کرنا چاہتے ہیں لڑائی جھگڑا کرکے تو پھر ٹھیک ہے لگے رہو۔

اور اگر ہم سنجیدہ ہیں تو یہ بات طہ شدہ ہے کہ جب ہم آپس میں ایک دوسرے کو جانتے تک نہیں تو ذاتی معاملہ میں تو ہم لڑ نہیں رہے تو اس سے یہ بات ثابت ہوتی ہے کہ یہ ناراضگی کسی نظریہ کی بنیاد پر ہے۔

اور جب ہم فیس بک کے پلیٹ فارم پے جمع ہوئے تو اسکی وجہ بھی یہ تھی کہ کسی نظریہ پے ہم سب متفق ہوے۔

تمام فتنوں کی بنیاد…… ترک تقلید

نبی صلی اللہ علیہ وسلم کی پیشن گوئی کے مطابق قرب قیامت میں فتنوں کا دور دورہ ہوگا جس کی طرف جامع ترمذی کی حدیث مبارکہ میں اشارہ ہے :

وَآيَاتٍ تَتَابَعُ كَنِظَامٍ بَالٍ قُطِعَ سِلْكُهُ فَتَتَابَعَ (جامع الترمذی ج2ص492)

کہ فتنے یوں پے در پے آئیں گے جیسے مالا کا دھاگہ ٹوٹنے سے موتی گرتے ہیں۔ اس دور میں یہ پیشن گوئی پوری ہورہی ہے۔ اگر ان تمام فتنوں کے پیدا ہونے کی وجوہات پر غور کیا جائے تو سب سے بڑی وجوہ اسلاف سے بیزاری،ان کی تحقیقات سے روگردانی اور سب سے بڑھ کر ان نفوس قدسیہ پر بدگمانی ہےجنہوں نے دین اسلام کی تدوین میں اپنی زندگیاں صرف کردیں۔عام الفاظ میں ہم اسے ترک تقلید [جس کا مرتکب''غیر مقلد'' کہلاتا ہے] سےتعبیرکر سکتے ہیں۔ جی ہاں! ترک تقلید ہی اسلافِ امت اور فقہاء کرام رحمہم اللہ کی سمجھ کو پیروں تلے روند کر خود ساختہ تحقیق اور نفسانی خواہشات کے مطابق عمل کرنے کا نام ہے۔ جوبھی فتنہ اٹھتا ہے اس کی ابتداء اسی ترک تقلید سے ہوتی ہے ۔کچھ فتنوں کا حال بطور ِنمونہ پیشِ خدمت ہے۔

 

 

 

 

 

آئیے حقیقت جانیئے اور غیرمقلدوں کو پہچانیئے

نمبر [196] آپ صلی الله عليه وسلم نے فرمایا کہ کتا سامنے سے گزر جائے تو نماز ٹوٹ جاتی ہے [مسلم ص 197 ج 1] لیکن آپ صلی الله عليه وسلم نماز پڑھاتے رہے اور کتیا سامنے کھیلتی رہی ، اور ساتھ گدھی بھی تھی ، دونوں کی شرمگاہوں پر بھی نظر پڑتی رہی

یہاں [غیرمقلدین] کی طرف سے حضرت مولانا محمد امین صفدر اوکاڑوی رحمه الله پر یہ الزام اور بہتان لگایا جاتا ہے کہ مولانا محمد امین صفدر اوکاڑوی نے "آپ صلی الله عليه وسلم" کی گستاخی کی ہے - تو غیرمقلدین کے اس اعتراض ، الزام اور بہتان کی حقیقت جانیئے اور غیرمقلدین کی چالاکیاں اور مغالطے بازیوں کے طور طریقے پہچانیئے

اپنے آپ کو اہل حدیث کہہ کر امت کو بہکانے والوں سے چند سوالات

غیر مقلدین سے چند سوالات

سوال1۔ کیا قرآن پاک میں نماز پڑھنے کا طریقہ بالتفصیل موجود ہے؟

(نوٹ) بالتفصیل سے مراد شرائط، ارکان، واجبات، سنن موکدہ، مستحبات، مباحات، مکروہات اور مفسدات ہیں، ان میں ہر ایک کی تعداد، ہر ایک کی تعریف،ہر ایک کے عمد اور سہوا چھوٹ جانے کا حکم صرحة موجود ہونا ہے۔

سوال2۔کیا بخاری شریف میں نماز پڑھنے کا طریقہ بالتفصیل و بالترتیب موجود ہے؟

سوال3۔کیا مسلم شریف میں نماز پڑھنے کا طریقہ بالتفصیل و بالترتیب موجود ہے؟

سوال4۔کیاسنن نسائی میں نماز پڑھنے کا طریقہ بالتفصیل و بالترتیب موجود ہے؟

سرسید احمد خان قومی رہنما یا انگریز کا زر خرید ایجنٹ

سرسید احمد خان ہمارے ملک کے بہت سے لوگوں کے لیےانتہائی محترم ہیں جبکہ کچھ کے نزدیک وہ دنیا کی ایک مخصوص "برادری" کے متحرک فرد تھے، خود ہمارے سامنے سکولوں کالجوں میں سرسید احمدخان کو ایک عظیم قائدکے طور پر پیش کیا گیا، آج بھی انکی تصویر ہر سکول کالج میں لٹکی نظر آتی ہے، جسے ہماری قوم کا ہر بچہ آتے جاتے دیکھتا ہے اور صبح شام ان کی عظمت کا قائل ہوتا جاتا ہے ۔کئی دفعہ ان کی معتبر شخصیت اور تاریخی کارناموں پر لکھنے کا ارادہ کیا لیکن توفیق نہ ہوسکی ۔ چند دن پہلے خان صاحب کی ایک کتاب پڑھنے کو ملی جس میں خود خان صاحب نے اپنا نظریہ، اپنے خیالات و افکار نہایت خوبی سے بیان فرمائے ہیں۔ اس کتاب کی مدد سے ان پر کچھ لکھنے کا ارادہ اس لیے پختہ ہوتا گیا کہ ایک متنازع شخصیت کے متعلق فیصلہ کرنا عام طور پر کافی مشکل ہوتا ہے لیکن یہاں انکی اپنی تحریر جو بدست خود بقلم خود تھی ’ ہاتھ آگئی تھی۔ آئیے دیکھتے ہیں خود وہ اپنی تحریروں کے بین السطور میں اپنا تعارف کس انداز میں کرواتے ہیں۔ جناب کی تحریر کردہ کتاب " مقالات سرسید" کے مندرجات اس مخمصے سے نکلنے میں یقینا ہماری مدد کریں گے۔

  • Previous
  • Next
  • Stop
  • Play
  • 9
  • 8
  • 7
  • 6
  • 5
  • 4
  • 3
  • 2
  • 1

FIRQATUN NAJIYYAH

Many people today like to classify themselves as belonging to the Saved Sect (Firqatun-Najiyyah) - Ahl as-Sunnah Wa'l Jama'ah; but do these people really know which is the Saved Sect, from the many sects we have today? The following is an attempt to clarify some misconceptions by way of definitive proofs from the Qur'an and Sunnah, as well as quotes from the profoundly learned Classical Scholars of Islam. Know that there is only one Saved Sect in Islam, and this is the original pristine form of Islam that has been transmitted to us by Allah Subhana Wa Ta'ala in his Qur'an, his Rasul (Peace and blessings be upon him), the blessed Companions (may Allah be pleased with them all) and the great scholars of Islam (Allah's mercy be upon them all) who have been following their Straight Path for more than one thousand years of Islam's history. The first question that should be raised is: "What differentiates one sect from another sect?" The answer to this is simple and definitive! Know that the chief characteristic that distinguishes one sect from another, lies not in the differences of opinion that its scholars have attained by making ijtihad from the sources of the Shari'ah (this leads to the formation of the Madhhabs), but rather the actual belief (aqid'ah or i'tiqad in Arabic) that the scholars and laity of the sect in question are clinging onto - since the founding of their respective sect.

 

 

Who was Mirza Ghula Ahmad Qadiyani?

Mirza Ghulam Ahmad Qadiani was the founder of the Non-Muslim Ahmadiyya Movement. He introduces himself to the world.Mirza says that I am not son of a human but am "such a place of human`s body that causes shame and hate: guess what? (Braheen Ahmaiyya part 5, page 97 Roohani Khazain volume 21 page 127, Dur-re- sameen old page 88, new p. 125).

Who was Mirza Qadiyani?.please do guess it!Every man is best known to himself!

Was Mirza Ghulam Ahmad Qadiani a gentleman?

The delicate secrets between God and Mirza Qadiani JMirza Qadiyani lies in his teeth ;

The name of Mirza Qadiyani’s God is ”Yalash” (The collection of his Revelations: Tazkarah page no.379).Mirza claims "In fact between God and myself there are delicate secrets of which the world do not know and I have an inexplicable spiritual link with God. (Braheen Ahmadiyya part 5,Nusratul Haq p. 63, Roohani Khazain volume 21 page 81).

Hijab of Women and its Boundaries

Abu Bakr ibn Abi Shaybah and Abu Kurayb narrated to us. They said: Abu Usamah narrated to us: from Hisham: from his father: from ‘A’isha (Allah be pleased with her): she said:

“Sawdah (Allah he pleased with her) went out [in the fields] in order to relieve her need after the hijab had been prescribed upon her. She had been a bulky lady, physically taller than other women, and she could not conceal herself from one who had known her. ‘Umar ibn al-Khattab (Allah be pleased with him) saw her and said, ‘O Sawdah, by Allah, you cannot conceal [yourself] from us. Therefore, be careful when you go out.’” ‘A’isha said: “She turned back. Allah’s Messenger (Allah bless him and grant him peace) was at that time in my house having his evening meal and there was a bone in his hand. Sawdah entered and said, ‘O Messenger of Allah, I went out and ‘Umar said to me so and so.’” ‘A’isha said: “Revelation came to him, then it was lifted from him and the bone was [still] in his hand and he had not put it [down]. He then said, ‘Permission has been granted to you that you may go out for your needs.’” (Sahih Muslim)

***SAHABA***

The Companion of Holy Prophet of Allah

The companions of the Holy Prophet of God are spread all over the firmament of Islam like the brilliant stars on the sky. They were the persons who readily responded to the call of Prophet Mohammad peace be upon him when he came out with the message of the Oneness of God. They did not embrace Islam with any selfish motive or securing anything . It is not difficult to understand from a study of the circumstances prevailing at the advent of Islam that it was a very critical period for the Muslims.

To embrace Islam in those days meant to invite trouble and misery of oneself. Despite this, those scared souls, the companions of the prophets, known as Sahaba, accepted Islam without any fear of trouble and atrocities. No one could succeed in attaining such sublime state in Faith and Knowledge as these few fortunate ones. By enduring all sorts of humiliation and unbearable atrocities in the way and love for the Devine Message and devotion to Righteous path, they sent examples which will serve as a beacon light for the seekers of Truth and Righteousness.

The Concept of Bid’ah in the Shari’ah

By Shaykh al-Islam Mawlana Shabbir Ahmad 'Uthmani

Muhammad ibn al-Muthanna narrated to me: ‘Abd al-Wahhab ibn ‘Abd al-Majid narrated to us: from Ja’far ibn Muhammad: from his father: from Jabir ibn ‘Abd Allah, he said:

When Allah’s Messenger (Allah bless him and grant him peace) would deliver a sermon, his eyes became red, his voice rose, and his anger intensified, so it was as though he was warning against an army, saying, “The [enemy] has made a morning attack on you and an evening attack on you.” He would say: “The Hour and I have been sent like these two” and would join his forefinger and middle finger. And he would say: “As for what follows. The best of speech is the Book of Allah, and the best of guidance is the guidance of Muhammad. And the most evil of affairs are their innovations; and every bid’ah is misguidance.” He would further say: “I am dearer to a Muslim than his self. And one who left behind property, that is for his family. And he who left a debt or children, that is [given] to me and [their responsibility] is on me.” (Sahih Muslim)

 

Clarifying Misconceptions about

Tahdhir al-Nas

Do you consider any being better than the Prophet (Allah bless him and grant him peace)?

Answer:

Our belief and the belief of our elders is that our chief, our master, our beloved and our intercessor, Muhammad, the Messenger of Allah (Allah bless him and grant him peace), is the best of all creatures and the best of them in the presence of Allah (Exalted is He). None is comparable to him, rather [none] come close to him (Allah bless him and grant him peace) in proximity to Allah (Exalted is He) and the elevation of his rank in His presence. He is the chief of the Prophets and Messengers and the seal of the purified and the Prophets as established in the texts. This is what we believe and acquiesce to Allah (Exalted is He). Our elders have expressed this in more than one book.

 

font-family:

  • Previous
  • Next
  • Stop
  • Play
  • 9
  • 8
  • 7
  • 6
  • 5
  • 4
  • 3
  • 2
  • 1

Latest News

  • Video: You Can Watch and download Videos in Video section -

    .

  • Munazray: You Can Watch Munazray against Firaq-e-batila -

    .

  • Quran: Listen and Download Tilawets of Quran In Quran section -

    .

اتحاد اہل سنت و الجماعت کی نئی باڈی کی تسکیل

اپریل ٹرتھ

محمدرضوان عزیز

غلامی کتنی بری چیز ہےجوانسان کے احادسات وجذبات اوراس کے نسلی وقومی امتیازات کوکچل کر رکھ دیتی ہےہم پاکستانی بحثیت مجموعی غلامانہ ذھنیت کے مالک ہیں اس لیے آقاوں کی ،،اترن ،،کو بھی،، ریشم وکمخواب،، سمجھتے ہیں اپنی تہذیب طرزبودباش فکری سوچ بچارہرچیزکوطلاق دے کرمغربیت کےدام  ہمرنگ زمین میں ایسے الجھے کہ رہائی کی راہیں مسدودہوگئی۔ان مغربی فکری قباحتوں میں سے ایک اخلاقیات کےہردرجہ سے گری ہوئی حرکت”اپریل فول“کامناناہے۔اپریل فول کیاہے؟آئیے پہلےاس عالمگیربے راہ روی کاتاریخی جائزہ لیں پھردیکھتےہیں اس اونٹ کے لیےاسلام کےخیمےمیں گنجائش ہےبھی یانہیں؟

Read Article

Written by ownislam 07 April 2012

علماء دیوبند ڈاکٹر علامہ اقبال کی نظر میں

١۔''دیوبند ایک ضرورت تھی ۔اس سے مقصود تھا ایک روایت کا تسلسل وہ روایت جس سے ہماری تعلیم کا رشتہ ماضی سے قائم ہے ۔''

(اقبال کے حضور ص ٢٩٣)

٢۔'' میری رائے ہے کہ دیوبند اور ندوہ کے لوگوں کی عربی علمیت ہماری دوسری یونیورسٹیوں کے گریجویٹ سے بہت زیادہ ہوتی ہے ۔''

(اقبال نامہ حصہ دوم ص٢٢٣)

٣۔'' میں آپ (صاحبزادہ آفتاب احمد خان) کی اس تجویز سے پورے طور متفق ہوں کہ دیوبند اور لکھئنو (ندوہ) کے بہترین مواد کو بر سرِکار لانے کی کوئی سبیل نکالی جائے ۔''

(اقبال نامہ حصہ دوم ص ٢١٧)

٤۔''ایک بار کسی نے علامہ مرحوم سے پوچھا کہ دیوبندی کیا کوئی فرقہ ہے ؟ کیا'' نہیں ہر معقولیت پسند دیندار کا نام دیوبندی ہے ۔''

(علماء دیوبند کا مسلک ص ٥٥)

Read Article

Other Menu

Latest Articles

Who's Online

We have 194 guests online

Statistics

Members : 6
Content : 1066
Content View Hits : 4330089

Get Latest Feed

Enter you email address to get in touch with latest updates

یہاں اپنا ای میل ایڈریس رجسٹر کروائیں اور ویب سائٹ کی تازہ اپ ڈیٹس سے باخبر رہیں

Most Read Articles

  1. مولانا اسماعیل محمدی
  2. فضائل اعمال
  3. مولانا محمد امین صفدر اوکاڑوی
  4. نفس کے پجاری - غیر مقلدین
  5. جنت البقیع میں مدفون علمائے دیوبند
  6. طاہر القادری رنگے ہاتھوں پکڑا گیا۔!! ضرور دیکھیں
  7. شیعہ مذہب کی ابتداء ۔۔۔ اور ان کا فرقوں میں بٹنا
  8. انٹرنیٹ کی کارستانیاں (ایک بدنصیب لڑکی کی داستان
  9. انگریز کا الاٹ کردہ لقب اہلحدیث واپس کرتے ہیں
  10. Mufti Manzoor Mengal
  11. فتنہ ڈاکٹر ذاکر نائیک
  12. مولانا حق نواز جھنگوی ۔ آڈیو بیانات
  13. مناظرہ کوہاٹ کی ویڈیوز
  14. جوشخص شیعہ کے کفر میں توقف کرے تو وہ بھی ان جیسا کافر ہے۔
  15. ترک رفع الیدین والی حدیث کو کن کن محدثین نے صحیح قرار
  16. مولانا ضیا ء الرحمن فاروقی ۔ آڈیو بیانات
  17. Shaikh Saad Al Ghamedi
  18. مناظرہ ترک رفع الیدین - محمد امین اوکاڑوی
  19. مصنف ابن ابی شیبہ کی ناف کےنیچےہاتھ باندھنےوالی روایت کی تحقیق
  20. شیعوں کا عقیدہ ان کی کتابوں سے
  21. Ameer Shariat Syed Attaullah Shah Bukhari
  22. بیکاٹ فیس بک
  23. تاریخی حولات جات۔ شیعہ کافر
  24. خاتم الانبیاء کا طریقہ نماز
  25. درس حدیث دارالعلوم دیوبند
  26. Maulana Ilyas Ghuman - Audio bayanat
  27. غیر مقلدین کے سوالوں کے جوابات
  28. بریلویت قصور۔ مولانا الیاس گھمن
  29. ام المومنین سیدہ عائشہ صدیقہ رضی اللہ عنہا
  30. اهل حدیث کے چهہ نمبر
  31. ALLAH EXISTS WITHOUT A PLACE
  32. سلفی کون؟ حنفی یا غیرمقلد؟
  33. سنی مسلمان شیعہ کی تکفیر کیوں کرتے ہیں؟
  34. The Blindest Following
  35. میں کیوں حنفی ہوا؟

Share you Idea

تمام حضرات سے گذارش ہے کہ سائیٹ کو ایکسپلور کرتے ہوئے اگر آپ کو کوئی خرابی نظر آئے یا اپ سائیٹ کی بہتری کیلئے کوئی مشورہ دینا چاہیں تو کنٹیکٹ اس کے پیج پر جا کر ہمیں ضرور مطلع فرمائیں

 

Ownislam:

This Website is dedicated to our beloved Prophet Muhammad (PBUH). In this website you will get the correct information regarding Islam in the light Holy Quran and the Authentic Hadith. It's time to understand and practice Islam properly so that we can spread the message and teachings of deen. Our zeal is to bring people back to real Jama'at of our Nabi Muhammad PBUH and Sahabas R.A.

We Would Like You To

Join .... Invite ... Share